PTA IMEI block mobile by IMEI number

PTA IMEI block mobile by IMEI number

دوستو ایک اہم اعلان جو PTA Pakistan کی جانب سے کیا گیا ہے کہ پی ٹی اے آپ کے موبائل کو بلاک کردیگا۔ اب اس کو دھیان سے پڑھ لیں شاید آپ کا یا آپ کے دوست کا موبائل بلاک ہونے سے بچ جائے! اب دوست کا نام میں نے اس لئے لیا کہ آپ سب سے پہلے دوست کو ہی تو جاکر اس اہم بات کو شئر کرینگے نا!!!

بہت سے لوگوں کو میسجز آرہے ہیں کہ اگر ان کا موبائل   IMEI compliant نہیں ہے تو  بیس اکتوبر کو بند کردیا جائیگا۔  اب یہ سب کیا ہے اور موبائل کیوں بند ہوگا؟   اب کچھ پیچیدہ بھی ہے لیکن سمجھنا مشکل نہیں ہے۔ آپ جانتے ہیں کہ دنیا میں جتنے بھی موبائل فونز آتے ہیں ان کا ایک imei نمبر ہوتا ہے۔

ایک آرگنائزیشن ہے   G.S.M.A کے نام سے جو ان موبائل فونز کو  IMEI نمبر دیتی ہے۔ یعنی جو نمبر آپ کے موبائل کا ہے وہ لازمی اس آرگنائزیشن کے پاس بھی ہوگا۔اسی لئے اگر جعلی IMEI نمبر ہے تو وہ ان کے پاس نہیں ہوگا۔جیسا کہ آج کل ہوتا ہے کہ کمپیوٹر سوفٹ ویئر کی مدد سے کسی بھی موبائل کا  IMEI نمبر تبدیل کردیا جاتا ہے۔ اب ایک ہی  نمبر بہت سے موبائل ڈیوائسز پر ڈال دیا جاتا ہے۔

اب اس سے ہوتا کیا ہے؟ یہ ایک اہم سوال ہے اصل میں جب کرائم ہوتے ہیں تو سکیورٹی ادارے اس نمبر کی مدد سے جرائم پیشہ افراد کی لوکیشن ٹریس کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ پھر جب ایک ہی IMEI نمبر بہت سی ڈیوائسز پر ہوتا ہے تو وہ ادارے لوکیشن ٹریس نہیں کرپاتے اور اس کا سارا فائدہ یہ جرائم پیشہ عناصر اٹھاتے ہیں۔اسی لئے کسی بھی موبائل کا IMEI نمبر تبدیل کرنا غیر قانونی ہے۔

PTA کیا کرنا چاہ رہی ہے؟

اب اس  IMEI سے اور بھی کام لئے جاتے ہیں۔ جیسے کہ PTA یہ دیکھتی ہے کہ کون سے IMEI پر ٹیکس پے کیا گیا ہے اور کس پر نہیں؟ اب ظاہر ہے کہ جو اسمگل  ہوتے ہیں ان پر ٹیکس پے نہیں کیا گیا ہوتا جو PTA کو کسی صورت برداشت نہیں ہے۔  اصل میں ان موبائلز کے IMEIنمبرز بھی PTA کے پاس نہیں ہوتے تو گورنمنٹ چاہتی ہے کہ ایسے فونز کے  IMEI نمبرز ان کے پاس موجود ہوں۔

propakistani successfull blog kaise banaye 

تو ایسے میں آپ کو کرنا یہ ہے کہ جو بھی موبائل آپ کے پاس ہے جو ابھی تک استعمال نہیں ہوا اس پر سم لگاکر آن کرلیں بس اس طرح آپ کا ریکارڈ PTA کے پاس چلاجائیگا اور پھر فون میں کوئی مسٔلہ نہیں ہوگا۔یعنی آپ کا فون IMEI Compliant بن جائیگا۔

اب اس کو کیسے چیک کریں کہ آیا موبائل فون comp;iant ہے یا نہیں!!!!!   اسکے کچھ طریقے ہیں جیسے PTA کی ویب سائٹ پر جاکر چیک کیا جاسکتا ہے اور ایک اچھا طریقہ میسج سروس کا بھی ہے جو کچھ اس طرح سے ہے کہ پہلے آپ اپنے موبائل کا IMEI نمبر معلوم کریں جو آپ کو ڈائل پیڈ پر *#06# اسٹار ہیش صفر   چھ ہیش اینٹر کرنے سے مل جائیگا۔ پھر آپ اس نمبر کو 8484 پر میسج کریں آپ کو بتادیا جائیگا کہ آپ کے موبائل کا کیا اسٹیٹس ہے آیا وہ compliant ہے یا نہیں!!!!   

تو بس اس میں زیادہ بتانے کا کچھ نہیں ہے لیکن جب میسج آئے تو آپ کو بہت احتیاط سے اس میسج کو دیکھنا ہے اور اپنا مسٔلہ حل کرنا ہے ایسا نہ ہو کہ آپ کا مسٔلہ آپ کے حساب سے حل ہوگیا ہولیکن ان کی نظر میں حل نہ ہوا ہو۔!!!!!!!!!

app banane ka tarika

Game kaise banaye. appgeyser kya he

          دوستو اگر آپ کو بھی اپنی خود کی فری میں موبائل ایپ یا گیم بنانا ہے تو یہ آرٹیکل پورا پڑھ لیں۔ اس میں ایک ویب سائٹ کا بتانے جارہا ہوں جہاں آپ اپنی خود کی ایپ وہ بھی بلکل فری میں بنا سکتے ہیں۔ اور اس سے پیسے بھی کما سکتے ہیں۔ آپ کو پتا ہے کہ لوگ موبائل ایپس اور گیمز سے ہزاروں نہیں بلکہ لاکھوں کمارہے ہیں۔ جی ہاں یہ ممکن ہے بس آپ کو کچھ محنت اور وقت لگانا ہے۔ آپ نے اپنے موبائل پر پلے اسٹور سے اپپس تو ڈاؤنلود کی ہونگی؟ اس میں کچھ اردو کی بھی ہوتی ہیں۔ آپ چاہیں تو اردو میں یا انگلش میں یا جس زبان میں چاہیں بناسکتے ہیں۔

میری کچھ ایپس اور گیمز کے لنک جو میں نے اسی سائٹ پر بنائے ہیں:

urdu crosswords game

urdu mahjong game

pak railay ticket booking app

appgeyser screenshot
appgeyser screenshot

             اس کام کیلئے کچھ اور بھی پلیٹ فارم ہیں لیکن میں یہاں فی الحال اس کی بات کرونگا جو میں خود استعمال کررہا ہوں۔ اور پیسے بھی کمارہا ہوں۔ اور وہ سب ایپس اور گیم میں نے خود بنائے ہیں۔ آپ چاہیں تو چیک کرسکتے ہیں میں انکا لنک اسی جگہ کہیں دےدونگا۔ تو بات کرتا ہوں اس پلیٹ فارم کی جسکا نام ہے ۔ ایپ گیزر  appgeyser  جی یہی ہے وہ سائٹ جہاں آپ فری میں ایپ یا گیم بنا سکتے ہیں۔

اس کا   لنک میں یہاں دےرہا ہوں۔آپ اس پر کلک کرکے اس سائٹ پر جاسکتے ہیں۔ اور وہاں اکاؤنٹ بناکر یا اپنی گوگل یا فیس بک آئی ڈی سے بھی لاگ ان کرسکتے ہیں۔ پھر ہدایات کو فالو کرتے ہوئے اپنی ایپ بناسکتے ہیں۔ لیکن ہوسکتا ہے ہدایات آپ میں سے بہت سوں کو سمجھ نہ آئیں تو ایسے میں میں نے ایک اور آرٹیکل یا یوٹیوب وڈیو بنانے کا سوچا ہے جو جلد ہی بناؤنگا۔ جس میں ان سب ہدایات کو اچھے سے سمجھانے کی کوشش کرونگا۔

پاکستان میں affiliate سے پیسے کمائے

موبائل ایپ یا گیم کمپیوٹر پر رن کریں 

paisa kamane ka sabse aasan tarika

           یار دیکھو نیٹ پر کمانے کے بہت سے طریقے ہیں۔ جس ایک سے ایک بہت ہی آسان طریقہ ایپ بناکر پلے اسٹور پر اپلوڈ کردینے کا ہے۔ اور جب کوئی اس کو ڈاؤنلوڈ کرکے استعمال کرتا ہے تو آپ کو اس کے پیسے ملتے ہیں۔ اس میں ہوتا یہ ہے کہ آپکی ایپ میں گوگل ایڈ موب  google admob  کے اشتہار کوڈز لگے ہوتے ہیں۔ اور جب یوزر اس کو استعمال کرتا ہے تو اس کو اس ایپ یا گیم میں اشتہار دیکھنے کو ملتے ہیں۔ جس نے آپ کی کمائی ہوتی ہے۔ اب اس کا بھی ایک طریقہ ہے وہ بھی ایک الگ آرٹیکل کی صورت میں آپ کو بتایا جاسکتا ہے۔ 

             بہرحال وہ بعد کی بات ہے پہلے یہ پہلا مرحلہ ایپ بنانے کا وہ تو پورا ہو پھر آگے کا مرحلہ شروع ہوتا ہے۔ اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ گھر پر ہوں یا باہر ہوں سورہے ہوں یا جاگے ہوئے ہوں یا کھومنے گئے ہوں اور آپ کے پیسے بنتے رہیں تو آپ کو ایپ بنانے کی طرف آنا چاہئے جہاں ایسا ہی ہوتا ہے کے آپ ایک دفعہ ایپ بناکر پلے اسٹور میں اپلوڈ کردیتے ہیں پھر جو بھی اس کو استعمال کرتا ہے تو آپ کی کمائی میں اضافہ ہوتا رہتا ہے۔

History of youtube

History of youtube

             دوستو آپ اگر نیٹ استعمال کرتے ہیں تو آپ یوٹیوب سے ضرور واقف ہونگے بلکہ استعمال بھی کیا ہوگا لیکن کیا آپ کو اس کے پیچھے کی دلچسپ کہانی معلوم ہے؟ چلیں دیکھ لیتے ہیں کہ یہ کیسے شروع ہوا اور کون اس کے اونر ہیں۔ History of youtube ایک بہت اچھا معلوماتی مضمون ہے۔

             آج یوٹیوب ایک بہت بڑا اور دنیا میں دوسرے نمبر پر آنے والا سرچ انجن ہے جس نے یاہو جیسے بڑے بڑے سرچ انجن کو پیچھے چھوڑدیا ہے۔  دوستو بارہ سال ہوگئے ہیں اب تک یوٹیوب کو بنے ہوئے۔ paypal جو ایک نیٹ پر موجود پیسے ٹرانسفر کرنے اور recieve کرنے کی کمپنی ہے۔ اس کے تین ملازم ایک رات کو جمع تھے جن کے نام   chad hurley, steve chen, اور  jawed krim  ان لوگوں  نے سوچا کے ایک پلیٹ فارم ہونا چاہئے جہاں لوگ اپنی وڈیوز کو لوگوں کے ساتھ شیئر کر سکیں۔ 

             اور اس کے بعد پھر انہوں نے ایک ڈومین نیم جو  youtube.com تھا رجسٹر کروایا اور ایک ویب سائٹ بنا ڈالی۔  پھر اس کے بعد بہت لوگ اس میں وڈیوز اپلوڈ کرنے لگے تو ایک مسٔلہ سامنے آیا کے لوگ کسی کا بھی کنٹینٹ  content اٹھاکر اپلوڈ کردیتے تھے تو لوگوں کی شکایات آنے لگیں۔ پھر یہ کے اتنے بڑے setup کو مینج کرنا بہت مشکل ہوتا جارہا تھا تو ان تینوں نے یہ سائٹ گوگل کو سیل کردی۔

             اب گوگل نے اس کو اپنے طریقے سے مینج کرنا شروع کیا تو اس کو گویا پر لگ گئے گوگل اس کو اس جگہ لےگیا جہاں شاید وہ تینوں دوست نہ لیجا سکتے تھے۔ اور آج یوٹیوب آپ کے سامنے ہے۔تو اس کی کامیابی کی وجہ ایک مسٔلے کا حل نکالنا ہوا۔ آج بھی بڑے ٹاپ کے کاروباری ماہرین کا یہی کہنا ہے کہ اگر آپ مارکیٹ میں آسانی سے کامیاب ہونا چاہتے ہیں تو ایسی پروڈکٹ مارکیٹ میں لائیں۔ جو لوگوں کی کسی بھی مسٔلے کو حل کرتی ہو اس سے بغیر کسی اشتہار بازی کے لوگوں میں آپ کی پروڈکٹ کامیابی حاصل کرلیگی۔

             

Top affiliate program in pakistan

Top affiliate program in pakistan

            دوستو آج کل دنیا میں ایک بڑی تعداد آن لائن   affiliate program سے ہزاروں نہیں لاکھوں کمارہی ہے۔ ان میں ایک انڈیا بھی آتا  ہے۔  انڈیا میں کمپنیز باقاعدہ کام کررہی ہیں جس کی ایک بڑی مثال amazon  کا خاص انڈیا کیلئے ایک ویب سائٹ بنانا ہے جس کو انڈیا میں  amazon.in  کے نام سے جانا جاتا ہے۔ لیکن جب پاکستان کی بات آتی ہے تو بدقسمتی سے زیادہ اچھی صورتحال نہیں ہے۔ لوگ آج بھی گوگل پر  top affiliate program in pakistan لکھ کر سرچ کررہے ہیں کے شاید کچھ اچھا مل جائے؟

             آپ کو پتا ہوگا اور اگر کسی کو نہیں پتا تو بتادوں کے  amazon کا کوئی پیج یا سائٹ پاکستان کیلئے خاص نہیں ہے جیسے انڈیا کیلئے ہے۔ اب وجہ تو نہیں معلوم شاید اس کو یہاں کام زیادہ نہیں نظر آیا ہوگا۔ لیکن اب ایک  خبر ہے کہ  amazon پاکستان میں بھی اپنی سروسز شروع کرنے کا سوچ رہی ہے۔ لیکن وہ پتا نہیں کب ہوگا ہم ابھی کیلئے بات کرتے ہیں۔ اور ابھی کیلئے  amazon کا  affiliate program پاکستان کیلئے کچھ زیادہ فائدہ مند نہیں ہے۔

            کیونکہ آدھے سے زیادہ آئٹمز جو amazon پر دستیاب ہیں وہ پاکستان میں شپ ہی نہیں ہوتے۔ تو اگر آپ امیزون کا پروگرام جوائن بھی کرتے ہیں تو کچھ خاص فائدہ نہیں لے سکتے ہیں۔ یا بہت ہی سخت محنت کرکے کچھ فائدہ لیسکتے ہیں۔ تو ایسے میں کیا کیا جائے؟ یہاں میں امیزون کے علاوہ کچھ سائٹس بتانا چاہتا ہوں جہاں سے آپ اچھی کمائی بھی کرسکتے ہیں اور وہ قابل اعتماد بھی ہیں جہاں تک میری معلومات ہیں باقی نیت کے حال تو اللہ جانتا ہے۔

daraz affiliate program

            دراز ڈاٹ کام ایک بہت اچھی اور مشہور آن لائن شاپنگ سائٹ ہے جہاں سے لوگ اپنی پروڈکٹ سیل کرکے اچھا پیسہ بنارہے ہیں۔ یہاں ایک بات میں کلیئر کرتا چلوں کہ daraz کا جو affiliate program ہے ۔ وہ شاید ایکٹیو نہیں ہے۔ کیونکہ اس میں اکاؤنٹ بنانے پر daraz کی طرف سے کوئی رسپانس نہیں ملتا ہے۔ اب پھر لوگ کیسے کمارہے ہیں؟ تو جناب daraz میں لوگ ایک پروگرام جوائن کرتے ہیں جسکا نام سیلر پروگرام ہے جس پر لوگ اپنی پروڈکٹ ڈال کر بیچ رہے ہیں۔ 

            یہ daraz affiliate program سے اچھا پروگرام ہے۔ اس میں زیادہ کمائی بھی ہے اور ٹینشن بھی نہیں ہے۔ کیونکہ اس میں پروڈکٹ پہنچانے کی ذمہداری دراز کی ہے۔ آپ کو صرف اکاؤنٹ بناکر اپنی پروڈکٹس کو لسٹ کرنا ہے۔ پھر آرڈرز آئینگے تو دراز آپ کو فارورڈ کریگا اور آپ اس کو پیک کرکے دراز کے سپلائر کو دینگے جو وہ پروڈکٹ آپ سے لینے آپ کے پاس آئیگا۔ اس طرح سے لوگ اچھا کمارہے ہیں۔   daraz کا سیلر پروگرام جوائن کرنے کیلئے یہاں کلک کریں۔ یہاں آپ کو کچھ اپنی معلومات دینی ہونگی پھر آپ اپنا سیلر اکاؤنٹ ایکٹیو کر پائینگے۔ 

اردو بلاگ بنانا

 

دیگر پروگرام

           اس کے علاوہ بھی بہت سے پروگرام ہیں جن کی معلومات مجھ تک آتی رہیگی تو میں آپ تک پہنچاتا ہونگا۔ ان میں   ebay.com اور  aliexpress.com وغیرہ اچھے ہیں۔ جو آپ جوائن کرسکتے ہیں۔ اصل میں affiliate marketing ایک بہت بڑی مارکیٹ بن گئی ہے۔ جس میں آپ  کئی طرح کے پروگرام جوائن کرسکتے ہیں جیسے travel  کا پروگرام ہوگیا۔ games sites  آج کل اپنا affiliate program آفر کررہی ہیں۔ 

             کام بہت ہے اس فیلڈ میں کرنے کا بس آپ کو یہ سیکھنا ہے کہ یہ کرنا کیسے ہے اور کون سا کسٹمر کیسے آپ ڈھونڈ سکتے ہیں۔ اس میں ایک اچھی چلتی ہوئی سائٹ یا بلاگ بھی چاہئے جہاں آپ ان پروگرامز کے لنکس ایڈ کرینگے۔ جہاں ٹریفک بھی اچھا خاصا  ہو۔

 

وہ عادتیں جو آپ کو لوگوں میں اچھا بنادینگی effective habits in urdu

وہ عادتیں جو آپ کو لوگوں میں اچھا بنادینگی effective habits in urdu

            یہ عادتیں آپ کو پراثربنادینگی۔یہ عادتیں ان افراد میں دیکھی گئی ہیں جو کامیاب ہوا ہے۔ اور جو کامیاب ہونا چاہتا ہے اس کو بھی یہ عادتیں اپنانی چاہئیں اس لئے نہیں کہ آپ صرف کامیاب ہوں۔ بلکہ اس لئے بھی کہ آپ اچھے انسان اور معاشرے کے اچھے شہری کہلائیں۔

فعال رہیں   active person

             دیکھو یار اس دنیا میں آپ کو دو طرح کے لوگ ملینگے۔ ایک وہ جو منفی  ردعمل والے ہوتے ہیں۔ دوسرے جو مثبت اور فعال ہوتے ہیں۔ اب جو منفی ردعمل والے ہوتے ہیں وہ اپنی ناکامی کسی نا کسی طرح دوسروں پر ڈال دیتے ہیں۔ لیکن پھر بھی نا خوش رہتے ہیں۔ مثلا اگر وہ امتحان میں فیل ہوجائیں تو ان کا کہنا کچھ اس طرح سے ہوگا۔ لائٹ نہیں تھی گھر میں میرا الگ کمرہ نہیں تھا۔ یا امی نے مجھ سے گھر کے کام کاج کروائیں ہیں۔ وغیرہ

             اس کے مقابلے میں مثبت سوچ والے اپنی ذمہ داری خود پر ہی رکھتے ہیں۔ وہ اگر کسی کام میں ناکام ہوجاتے ہیں تو یہ نہیں کہتے کہ میں اس وجہ سے ناکام ہوا۔ بلکہ یہ سوچتے ہیں کہ میں نے کہاں غلطی کی ہے جو مجھے سدھارنا چاہئے۔ وہ ہمیشہ اپنی غلطیوں اور کوتاہیوں کو سدھارنے میں لگے رہتے ہیں۔ اور میرا مقصد آپ کو ان ہی جیسا بنانا ہے۔ کیونکہ یہ لوگ کبھی نہ کبھی کامیاب ضرور ہوتے ہیں۔ جبکہ دوسری طرح کے لوگ کامیابی کو بس سوچ سکتے ہیں۔

کام کو اس کے حساب سے مینیج کرنا

             آپ کو اپنے ذہن کو ایسے ترتیب دینا ہے کہ وہ کام کو انکے سہی وقت پر کرنے کے حساب سے فعال رہے۔ مثلا کون سا کام  سب سے پہلے کرنے کا ہے کون سا ایک دو دن کے اندر اور کون سے کام کو لمبے عرصے کے بعد بھی کیا جاسکتا ہے۔ جب آپ یہ چیز سیکھ لیتے ہیں تو آپ کو ٹائم مینیج کرنے میں بہت آسانی ہوجاتی ہے۔ پھر آپ کم وقت میں زیادہ کام کرسکتے ہیں۔ان کاموں کو ایک چارٹ سے سمجھ لیتے ہیں۔

ضروری اور اہم

یہ وہ کام ہیں جو اہم بھی ہیں اور ضروری بھی ہیں۔ جن کو نہ کرنے سے آپ کو معاشی یا گھریلو نقصان ہوسکتا ہے۔

غیر   ضروری

یہ وہ کام ہیں جو کرنے ہیں لیکن آپ ان کو کسی وقت میں کرسکتے ہو۔ جیسے گھر والوں کے ساتھ کہیں باہر جانا یا شاپنگ کرنا وغیرہ

غیر اہم  لیکن ضروری

یہ وہ کام ہیں جو اہم نہیں ہیں لیکن پھر بھی آپ ان کو وقت پر کرتے ہو جیسے ڈرامہ دیکھنا جو اپنے ٹائم پر آتا ہے وغیرہ

غیر اہم غیر ضروری

یہ وہ کام ہیں جو صرف وقت کی بربادی ہیں جیسے جیس بک پر گھنٹوں وقت گزارنا یا گھنٹوں ٹی وی دیکھنا۔

              ان کاموں میں سے پہلے دو کاموں کو وقت دیں اور آکری دو طرح کے کاموں کو بہت ہی کم وقت دیں یا نہ دیں۔ کیونکہ یہ آپ کو کامیابی سے دور اور وقت کو برباد کرتے ہیں۔

کامیاب تو ہوجاتے ہیں لیکن خوشی؟

اپنی رائے کی اہمیت

جیت کا سوچو

             دیکھو یار ہار جیت صرف کھیلوں میں سوچو لیکن اصلی زندگی میں کسی کی ہار نہیں بلکہ بس اپنی جیت سوچو اور ہوسکے تو دوسروں کی بھی کیونکہ وہ بھی اپنے گھر والوں کیلئے محنت کررہا ہے آپکی طرح تو اگر آپ اس کی ہار اور اپنی جیت سوچو گے تو  کچھ خود غرض اور منفی ہوجاؤگے۔ یہ اچھی چیز نہیں ہے کیونکہ اصلی زندگی میں کسی کی ہار نہیں بلکہ سب کی جیت ہے لیکن محنت شرط ہے۔

پہلے سامنے والے کو سمجھو پھر اپنی سمجھاؤ

            یہاں چاہے کاروباری مسٔلہ ہو یا گھر کا مسٔلہ ہو ہر کوئی بس اپنی سنانا چاہتا ہے۔ اپنے آپ کو بلکل درست سمجھتا ہے حالانکہ ایسا نہیں ہے۔ کامیاب لوگوں نے یہ عادت اپنائی ہوتی ہے کہ پہلے وہ سامنے والے کو بولنے کا موقع دیتے ہیں۔ ان کی سمجھنے کے بعد اپنی سمجھانے کی کوشش کرتے ہیں۔ 

             گھروں میں بھی اکثر اسی وجہ سے بات بگڑتی ہے کہ نہ وہ آپ کی اور نہ آپ ان کی سننے کو تیار ہوتے ہیں۔ اگر آپ خاموش ہوکر پہلے سامنے والے کی سن لیں تو ایک تو آپ بڑے بن جاتے ہیں اور پھر اپنی بات کو زیادہ اچھے سے سمجھا پاتے ہیں۔ اور دوسرا بھی اپنی بات کہہ کر تھوڑا ٹھنڈا پڑ چکا ہوتا ہے اور آپ کی بات بھی سن لیتا ہے۔

اتحاد بناکر رکھنا

             کامیاب لوگ اتحاد بناکر رکھتے ہیں وہ کبھی اپنے آپ کو اکیلا نہیں کرتے یا جماعت سے علیحدہ نہیں ہوتے کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ اتحاد میں برکت ہے اور اس سے بہت سے کام نکلتے ہیں۔ ویسے بھی آپ نے وہ کہاوت سنی ہوگی کہ ایک اور ایک گیارہ ہوتے ہیں۔

 

کامیاب تو ہوجاتے ہیں پر خوشی? why are you unhappy

کامیاب تو ہوجاتے ہیں پر خوشی? why are you unhappy 

             تو جناب عالی آج کا موضوع یہ ہے کہ کیوں انسان سب کچھ پالینے کے بعد بھی نا خوش رہتا ہے۔ اس کو وہ خوشی نہیں ملتی جس کیلئے اس نے یہ سب محنت کی تھی۔ آپ نے بڑے لوگ دیکھے ہونگے جو ڈاکٹرز اور انجینئر وغیرہ بننے کے بعد بھی خوش نہیں ہیں۔ اس کی وجہ کیا ہے۔

             دیکھیں سب سے پہلے تو یہ کہ ہم نے خوشی کو چیزوں کے ساتھ جوڑا ہوتا ہے۔ جیسے آپ کے پاس سائیکل تھی پھر بائک آئی تو خوشی ہوئی پھر کار آئی تو اور خوشی ہوئی۔ اسی طرح گھر کا معاملہ بھی ہے اور دیگر چیزوں میں بھی یہی فارمولا ہوتا ہے۔لیکن پھر بھی خوشی نہیں ہے کیونکہ چیزوں سے جڑی خوشی عارضی ہوتی ہے جیسے بچے کو کوئی نیا کھلونا دیدیں تو وہ بہت خوش ہوتا ہے پھر ایک ٹائم کے بعد اسکا عادی ہوجاتا ہے اور وہ کھلونا جو ایک ٹائم میں اس کیلئے خاص تھا۔ اب نارمل ہوجاتاہے۔ اب اس کو اس کھلونے سے مزہ نہیں آرہا ہوتا ہے۔

             یہی حال دوستو انسانوں کا بھی ہے جب جب وہ نئی نئی چیز کا عادی ہوتا جاتا ہے اس چیز میں اسکی دلچسپی اور مزہ ختم ہوتا جاتا ہے۔ تو خوشی بھی باقی نہیں رہتی تو اب دائمی خوشی کیسے حاصل ہو؟  اس وقت دنیا میں آٹھ ہزار سے زیادہ خوشی کے موضوع پر کتابیں موجود ہیں جو بتاتی ہیں کہ کیسے خوش رہا جائے۔ اب ایسے سات طریقے دیکھے گئے ہیں جو خوشی کیلئے ضروری ہیں۔ وہ ایک ایک کرکے دیکھ لیتے ہیں۔

شکرگزاری

             سب سے پہلے شکر کرنے والا شخص ہے جو خوش رہتا ہے اگر آپ کے پاس سب کچھ ہے اور آپ اللہ کا شکر ادا نہیں کرتے تو آپ کا خوش رہنا مشکل ہے۔ یہ احساس ضروری ہے کہ جو مجھے ملا ہے اس میں میرا کمال کم اور اللہ کی مہربانی زیادہ ہے۔ 

معاف کرنا

             دوسرا  وہ شخص خوش رہتا ہے جو معاف کردیتا ہے معاف کرنا جانتا ہے۔ اللہ کو ایسے بندے سے بہت پیار ہے جو معاف کرنے والا ہو۔

بھول جاؤ

            جو شخص تکلیف دینے والی باتیں اور واقعات بھول جاتا ہے وہ خوش رہتا ہے۔ اب اس میں یہ ہے کہ جو بات نہیں بھولتی اس کو ذہن میں خود سے یاد نہ کرے بلکہ کسی اور طرف سوچ کو لیجائے۔ کیونکہ انسان اور واقعات تکلیف دیتے ہیں اور اس کا بہترین حل یہی ہے کہ معاملہ اللہ پر چھوڑکر آگے بڑھ جاؤ۔ 

سفر کریں

            انسان سفر کرنے سے جب نئی نئی چیزیں دیکھتا ہے تو خوش ہوتا ہے اس لئے سفر بھی ایک اچھا ذریعہ ہے خوشی حاصل کرنے کا۔

سیکھتے رہیں

             جو سیکھتا رہتا ہے نئی نئی چیزیں وہ خوش رہتا ہے۔یعنی آپ اپنے ذہن کو کہیں نہ کہیں نئی نئی چیزوں میں مرکوز رکھیں۔ جو آپ کے ذہن کو مصروف رکھیگا اور آپ کو نئی چیز سیکھنے کی خوشی بھی محسوس ہوگی۔ کچھ بھی سیکھیں جیسے کوئی زبان یا ڈرائیونگ یا تیراکی کچھ بھی سیکھتے رہیں ۔

اپنی رائے کی اہمیت

علم کس کا ہے؟

بچے کی تربیت

رشتہ داری

             اب رشتے ناتے بھی اس میں اہم کردار ادا کرتے ہیں یہ آپ کو خوش رکھتے ہیں۔ اس لئے جب بھی موقع ملے اپنے پیاروں کے ساتھ وقت ضرور بتائیں یہ آپ کو اندر سے خوشی دیگا۔

ایمان 

             انسان  کی خوشی  کیلئے ایمان بھی بہت ضروری ہے۔ جب ایمان ہوتا ہے تو ہمیں یقین ہوتا ہے کہ جو کچھ ہوتا ہے وہ اللہ کی طرف سے ہوتا ہے۔ کچھ ملنا کچھ چھننا یہ سب اللہ کی حکمتیں ہیں۔ تو ہمارا غم دور ہوجاتا ہے اور ہم سکون میں آجاتے ہیں تو جناب اللہ پر یقین اور ایمان کو بڑھائیں یہ آپ کو خوشی دیگا ۔

اپنی رائے کو اہمیت دلوائیں apni khud ki raiy banain

اپنی رائے کو اہمیت دلوائیں apni khud ki raiy banain

            دوستو  شاہ صاحب کہتے ہیں کہ اپنی خود کی رائے بناؤ۔ یہ آپ کی پہچان بنے گی۔ اب رائے کی تعریف کیا ہے پہلے تو اس کو سمجھ لو رائے مطلب کسی بھی چیز پر آپ نے کام کیا ہو پھر اس پر اپنا تجربہ بیان کیا ہو یہ اصل رائے ہے۔ اور ضروری نہیں کہ سہی ہو غلط بھی ہوسکتی ہے لیکن اہم یہ کہ آپ نے رائے دی۔ وہ آگے چل کر آپ اور بہتر کرلینگے لیکن اس پر کام اور ورک کرتے رہیں۔ ایک وقت میں آپ کی رائے کسی خاص شعبے میں وزن والی مانی جائیگی اور آپ کی پہچان بنےگی۔

            مثلا ایک ٹائم میں بلکہ آج بھی زیادہ تر سفر کو تفریح کیلئے کیا جاتا ہے لیکن سفر علم کیلئے بھی ہوتا ہے تعلیمی بھی ہوتا ہے۔ کسی خاص شخص سے ملاقات اور اس کے تجربے سے استفادے کیلئے بھی ہوسکتا ہے۔ جو آپ کو آپ کی رائے بنانے میں کردار ادا کریگا آپ کا ذہن سفر کے بارے میں ایک تجربے کے بعد ایک رائے قائم کریگا جسکی اہمیت ہوگی اور سفر کے حوالے سے آپ کی رائے کی اہمیت ہوگی۔ 

             اب رائے بنانے کا ایک خاص طریقہ بھی ہوسکتا ہے۔ جیسے کتابیں پڑھنا یار آپ کتابیں پڑھنا شروع کریں آپ کا ذہن سو نئے زاویے سے سوچنا شروع کردیگا اور آپ کسی چیز یا معاملے کو عام آدمی کے مقابلے میں زیادہ زاویے سے دیکھ پائینگے اور بہتر رائے قائم کر پائینگے۔ کتاب تو ویسے بھی ایک بہت ہی فائدہ مند چیز ہے آپ کو کسی بھی سفر میں گورے کے ہاتھ میں موبائل نظر آئے یا نہ آئے کتاب ضرور نظر آئیگی کیونکہ وہ اسکی کی اہمیت سے واقف ہے۔ تو آپ کو ذہن کے دریچے کھولنے ہیں تو پڑھنا شروع کردو ۔ چاہے دو صفحے ہی سہی لیکن پڑھو دو صفحوں میں مشکل سے تین  چار منٹ لگینگے پھر پڑھنے کی عادت خود ہی آپ کو زیادہ پڑھنے پر اکسائیگی۔

امیر بننے کیلئے ضروری چیزیں

محنت کا صلہ ضرور ملتا ہے

زیتون کا کاروبار

            اگر کسی کو دیکھنا ہے کے وہ کتنا قابل ہے اس کی رائے دیکھو مختلف چیزوں پر وہ آپ کو اس کی قابلیت کھول کر سامنے رکھدیگی۔ انسان کی زبان کے پیچھے قابلیت چھپی ہوتی ہے سنا ہوگا آپ نے؟   ایک دوسرا طریقہ رائے بنانے کا یہ ہے کہ آپ نئے دوست بنائیں یا نئے لوگوں سے ملیں جن کے نئے تجربات اور علم آپ کو بہت فائدہ دیگا۔ 

              اس کے علاوہ آپ کو اپنی رائے بنانی ہے اور اس کو بہتر کرنا ہے تو آپ کو غور و خوض کرنا ہوگا اب اس کا ہرگز یہ مطلب نہیں کے آپ کسی جگہ بیٹھ کر گھنٹوں سوچے چلے جارہے ہیں اور ادھر گھر والے آپ کو کسی نفسیاتی ہسپتال میں داخلے کا سوچ رہے ہوں۔ اس کا مطلب آپ چلتے پھرتے کسی مسٔلے پر ہلکا پھلکا سوچتے رہیں تاکہ اس کے بارے میں نئی سوچ اور زاویے ذہن میں آتے رہیں۔  بس اس بات کے ساتھ بات ختم کرتا ہوں کہ کسی نے کہا ہے علم اپنی لاعلمی کے احساس کا نام ہے۔

 

امیر بننے کیلئے کیا ضروری ہے ameer kaise bane

امیر بننے کیلئے کیا ضروری ہے ameer kaise bane

            اگر آپ کا یہ ماننا ہے کہ امیر اور بڑا بننے کیلئے زیادہ علم اور کوالیفکیشن چاہئے تو یہ درست نہیں ہے اور اگر آپ کا یہ ماننا ہے کہ زیادہ تیز دماغ چاہئے تو یہ بھی سہی نہیں ہے۔ مشاہدے میں یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ کبھی زیادہ پڑھے لکھے لوگ زندگی میں فیل ہوتے دیکھے گئے ہیں اور کم پڑھے لیکھے لوگ ترقیوں کی بلندی پر پہنچ گئے ہیں۔ 

             دنیا کے زیادہ تر کامیاب لوگ کم پڑھے لکھے ہیں اور یہاں میں ان کو جو کم پڑھے لکھے ہیں یا ذہن میں اتنے تیز نہیں ہیں ان کوحوصلہ اور راستہ دکھانا چاہتا ہوں۔ تاکہ وہ بھی نئے سرے سے اپنے آپ کو زندگی کی دوڑ میں شامل کرلیں اور کامیابیاں سمیٹیں۔ دنیا کے بڑے بڑے نام جیسے بالی ووڈ کے عامر خان اور سلمان خان یا انڈیا کے کامیاب کاروباری شخصیات اور بہت سے کامیاب کرکٹر جیسے سچن وغیرہ اپنی اسٹدی کو مکمل نہ کرسکے لیکن انہوں نے اس کو اپنی کمزوری نہیں بننے دیا اور اپنے آپ کو اس جگہ پہنچایا جہاں کوئی بہت زیادہ پڑھے لکھے شخص کو ہونا چاہئے۔ 

محنت کا صلہ ضرور ملتا ہے

خطرناک سیاحتی مقامات

              اس میں ایک بات جو اہم ہے وہ یہ کہ زیادہ پڑھے لکھے لوگ زیادہ سوچتے ہیں جب بھی وہ کچھ بڑا کرنے کا پلان کرینگے ان کی تعلیم ان کو ہر زاویہ سے سوچنے پر مجبور کریگی۔ جیسے اگر ناکام ہوگیا تو کیا ہوگا یا بڑا فیصلہ ہے تھوڑا تحقیق کرنی چاہئے یا اس میں تو پہلے ہی اتنے لوگ کام کررہے ہیں تو میرے چانسز بہت کم ہیں کامیاب ہونے کے وغیرہ وغیرہ۔

             اس کے مقابلے میں کم پڑھا لکھا تھوڑا کم سوچے گا کیونکہ اس کے پاس سوچ کے زیادہ زاویے ہی نہیں ہیں تو وہ فورا ایکشن لیگا اور نتیجہ ایکشن سے ہی نکلتا ہے۔ اس بات سے بہت لوگوں کو اختلاف ہوسکتا ہے کہ میں شاید پڑھائی کے خلاف ہوں۔ ایسا نہیں ہے بھائی میں بس ایک نظریہ اور تحقیق بتارہا ہوں۔ اور جن کا مقصد کسی بڑی پوسٹ پر پہنچنا ہے جہاں کوالیفکیشن ریکوائرڈ ہے تو ان کیلئے تو پڑھائی ہی ضروری ہے اور یہ ہی ان کی کامیابی ہے۔ یاد رکھیں جناب ہر ایک کی نظر میں کامیابی کی تعریف الگ ہوتی ہے۔

محنت کاصلہ ضرور ملتا ہے mehnat ka sila

محنت کاصلہ ضرور ملتا ہے mehnat ka sila

            دوستو آج کا موضوع بھی بڑا دلچسپ ہے جو بہت سی کنفیوژن دور کردیگا آپ کی محنت کے حوالے سے۔ یاد رکھنے کی بات یہ ہے کہ  اللہ محنت کبھی ضایع نہیں کرتا وہ محنت کا صلہ ضرور دیتا ہے۔ اب اس کی شکلیں مختلف ہوسکتی ہیں۔ جیسے میٹرک میں اگر نمبر محنت کے حساب سے نہیں آتے تو اس میں پریشان نہیں ہونا چاہئے کیونکہ ہوسکتا ہے اللہ آپ کو اس کا صلہ آگے چل کر کسی اور شکل دینا چاہتا ہو جو آپ کیلئے زیادہ بہتر ہو۔اس لئے جلد بازی اور غم کرنا سہی نہیں بلکہ یہ موقع صبر کا ہے۔

             اللہ تعالیٰ آپ کی محنت کا صلہ برکت کی شکل میں بھی دیتا ہے جو نمبر کم ہونے کے باوجود بھی آپ کو زیادہ کامیابی دلاتا ہے۔بس آپ کو یہ یقین رکھنا ہے کہ اللہ کے نظام میں آپکی محنت ضایع نہیں جاتی۔ وہ اس کو بڑھاکر واپس کرتا ہے۔یاد رکھیں زیادہ نمبر اور کامیابی ذہین کے حصے میں نہیں بلکہ محنت کرنے والے اور پختہ یقین والے کے حصے میں آتی ہے۔محنت کرنے والے کو کسی بات کا ڈر یا غم نہیں ہونا چاہئے۔ بلکہ اس کو مطمئن ہونا چاہئے کیونکہ محنت کرنے والا جسم و جان بذات خود اللہ کا انعام ہے۔ 

کامیاب لوگوں کی عادتیں

اپنا اعتماد کو کیسے بڑھائیں

اپنی ذات کی خوبیاں

آپ کا ایمان اور آپ کی کامیابی

            آپ کا ایمان اور یقین آپ کی کامیابی میں اہم کردارادا کرتا ہے۔ آپ کے پاس جو اختیار ہے وہ بہت طاقتور ہے اس کو استعمال کرکے آپ بہت کچھ کرسکتے ہیں۔آپ کو جو خواب دیکھنا ہے دیکھیں اور اللہ پر ایمان اور یقین رکھیں کہ وہ آپ کے خواب کو آپکی محنت کے بل بوتے ضرور پورا کریگا۔

             مثال بننا زیادہ بہتر ہے یا جو کامیاب ہوگیا ہے اس کی مثال سننا زیادہ بہتر ہے؟ یقینن مثال بننا زیادہ بہتر ہے تو آپ محنت کو اپناکر مثال بن سکتے ہو۔تاکہ آپ کی کایابی کی مثال لوگ دیں اور  آپ کی کامیابی کی کہانی لوگ سننا چاہیں۔ ایسی کامیابی آپ کو حاصل کرنی ہے۔

            ایک نقطہ آپ اپنے ذہن میں صاف کرلیں کہ زیادہ ذہین کامیابی کی علامت نہیں ہے یہ تحقیق سے ثابت ہے کہ ذہانت سے زیادہ محنت کامیابی کیلئے ذمہ دار ہے۔ اس لئے یہ کوئی معنیٰ نہیں رکھتی کے آپ ذہین ہیں یا عام ذہانت رکھتے ہیں۔

             اگلی بات یہ کہ خدمت کرنا سیکھیں جو انکساری اورخدمت گار نہیں بنتا وہ کامیابی سے دور ہوجاتا ہے۔ اس لئےآپ کبھی خانقاہ گئے ہوں تو آپ نے دیکھا ہوگا کہ وہ نئے آنے والے جو کچھ سیکھنے آتا ہے اس کو خدمت کے کام پر لگاتے ہیں۔ تاکہ اس کے اندر کی ’’میں‘‘ کو ماریں اور اس کو جھکنا سکھائیں یہ بھی ضروری ہے۔ ترقی کیلئے جھکنا،خدمت کرنا اورادب کرنا آپ کو آنا چاہئے۔