کچھ باتیں کسی سے شیئر نہ کریں apni kuch baten kisi ko na batain

کچھ باتیں کسی سے شیئر نہ کریں apni kuch baten kisi ko na batain

           کچھ باتیں کسی سے کبھی بھی شیئر نہیں کرنا چاہئیں۔ کیونکہ یہ آپ کو اس کے سامنے کسی موقع پر کمزور کرسکتا ہے کیونکہ وہ آپ کے ایسے راز جان گیا ہے جو آپ سماج کے سامنے نہیں لانا چاہتے ہیں۔اب اس کا یہ مطلب نہیں کہ وہ دوست یا شخص جس کے سامنے آپ نے اپنی ذاتی باتیں شیئر کی ہیں وہ آپ کو نقصان پہنچانا چاہتا ہے۔ یا دشمن ہے بلکہ اس کو آپ کی ان باتوں کی اہمیت کا اندازہ نہیں ہے۔وہ نہیں جانتا کہ ان باتوں کے لوگوں کے سامنے آنے سے آپ کی زندگی پر کیا اثر ہوگا۔

            اس نے جانتے بوجھتے یا انجانے میں کسی کے سامنے آپ کی پرسنل باتیں شیئر کردی تو اس سے ہوگا کیا کہ ایک تو آپ کی زندگی ڈسٹرب ہوجائیگی۔ اور دوسرے آپ کا اعتماد اس دوست پر ختم ہوجائیگا اور آپ بلاوجہ اس کے بارے میں غلط سوچنا شروع کردینگے۔ اس لئے آپ کیلئے یہ ہی بہتر ہے کے اپنی حساس باتیں اپنے تک ہی رکھیں۔

اپنے مقاصد   aims and goals

             اپنے مقاصد کو بھی کسی کے ساتھ شیئر نہ کرنا ہی بہتر ہے۔ کیونکہ ایک تو آج کل کوئی کسی کو آگے بڑھتا ہوا نہیں دیکھ سکتا۔ دوسرا پھر اگر آپ اس کام یا مقصد میں ناکام ہوگئے تو یہ لوگ آپ کو سوال کرکر کے سر میں درد ہی کردینگے۔ اس لیے بہتر ہے کے اپنے کاموں کو خاموشی سے پورا کریں اگر وہ کام کامیاب ہوگیا تو لوگوں کے سامنے خود ہی آجائیگا۔ اور اگر ناکام ہوگیا تو بھی کوئی بات نہیں کسی کے سوالوں کا سامنا نہیں کرنا پڑیگا۔

وہ خامی جو ناکامی کی ذمہ دار ہے

آپ کی اچھی عادتیں

اپنی اچھی باتیں

            اپنی اچھی باتیں بھی شیئر نہ کریں۔ ایک تو یہ ویسے بھی اچھی بات نہیں اس سے خود نمائی کا پہلو سامنے آتا ہے۔ اور دوسرے اس سے سامنے والا بور ہوجاتا ہے کیونکہ وہ ان باتوں میں زیادہ دلچسپی نہیں لیتا اور بہانے سے آپ سے جان چھڑانے کی کرتا ہے۔ اور پھر کسی اور کے سامنے آپ کی اس عادت کو مذاق اور ہنسی میں پیش کرتا ہے جو آپ کی شخصیت کیلئے بلکل بھی اچھا نہیں ہے۔

            یہاں بس آپ کسی کے ساتھ نیکی کریں اور بھول جائیں اسی میں بہتری ہے۔ اور ویسے بھی وقت ایک سا نہیں رہتا آپ اپنی اچھائیوں کا ڈنکا خود بجاتے ہیں لیکن پھر اچانک کچھ ایسے حالات آجاتے ہیں کہ آپ خود کسی کی مدد کے محتاج ہوجاتے ہیں۔ پھر اس وقت بڑی شرمندگی ہوتی ہے اور اس شخص کا سامنا کرنا مشکل ہوتا ہے جس کے سامنے ڈینگیں ماری گئی ہوتی ہیں۔

اپنا خرچہ اور بینک بیلینس

             یہ بھی ایک اہم بات ہے جو صرف آپ کو ہی معلوم ہونا چاہئے۔ کیونکہ اس سے بھی آپ پریشانی میں آسکتے ہیں جیسے کہ آپ نے اپنے کسی دوست یا جاننے والے کو اپنے بیلینس کے بارے میں بتایا ہوا ہے۔ تو بعد میں اگر وہ آپ سے پیسے ادھار مانگے تو آپ ینکار نہیں کرپائینگے اور اگر انکار کردیا تو دوست بھی جائیگا۔ کیونکہ آپ نے پیسے کے ہوتے ہوئے بھی اسکی مدد نہیں کی۔ یہ کچھ باتیں تھیں جو آپ کو بہت سوچ سمجھ کر کرنی ہیں یا بلکل نہ کریں یہی بہتر ہے۔

            

جواب دیجئے